Nazam: Tere Aankhon Se Hi
Poet: Gulzar
Reciter: Ikramullah Awan

Mood: Sadness
Theme:- Philosophical
Genre: Sufi

Show some love & support by Subscribing.
📍 Stay tuned 🙂

★★★ Contact me ★★★
Instagram, facebook, twitter, tikroc: https://linktr.ee/ikramullah_awan

Mic: Huawei mate 10 lite default
Audio editing: Adobe Audition CC 2019
Video editing: Adobe Premiere CC 2019
Logo and text: Adobe Photoshop CS 5

PC specs: Dell Optiplex 790 Core i5
16 GB RAM
1664 MB HD Intel Graphics
Windows 10

Poem:
Teri Ankhon Se Hi Khulte Hain Saveron Ke Ufaq
Teri Aankhon Se Hi Band Hoti Hai Ye Seep Ki Raat
Teri Aankhen Hain Ya Sajde Main Hai Ghegeen Namazi
Palken Khulti Hain to Youn Goonj Ke Uthati Hai Nazar
Jaise Mandir Se Jaras Ki Chale Namnaak Hawaa

Aur Jhukti Hain To Bas Jaise Azaan Khatm Huee Ho
Teri Ankhen, Teri Thahri Huee Gamgeen See Ankhen
Teri Ankhon Se Hi Takhleeq Huee Hai Sachchi
Teri Ankhon Se Hi Takhleeq Huee Hai Ye Hayat

تیری آنکھوں سے ہی کھلتے ہیں سویروں کے افق
تیری آنکھوں سے ہی بند ہوتی ہے یہ سیپ کی رات
تری آنکھیں ہیں یہ سجدے میں غمگین نمازی
پلکیں کھلتے ہیں تو یوں گونج کے اُٹھتی ہے نظر
جیسے مّندر سے جرس کی چلے نمانک صدا
اور چھپتی ہیں تو بس جیسے اذان ختم ہوئی ہے
تیری آنکھیں۔۔
تیری ٹھہری ہوئی غمگین سی آنکھیں
تیری آنکھوں سے ہی تخلیق ہوئی ہے سچی
تیری آنکھوں سے ہی تخلیق ہوئی ہے یہ حیات

Youtube